سعودی عرب میں کورونا کے137نئے کیسز سامنے آگئے

 سعودی عرب میں کورونا کے137نئے کیسز سامنے آگئے ہیں جس کے بعد مملکت میں کورونا سے متاثرہ افراد کی تعداد 2932 ہوگئی ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق اب تک مملکت میں631 افراد صحتیاب ہوکر گھروں کو جاچکے ہیں جبکہ 41افراد جان کی بازی ہارگئے ہیں اس کے علاوہ 41مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔

دوسری جانب سعودی وزارت داخلہ نے اعلان کیا ہے کہ ملک بھر کے باقی تمام شہروں اور علاقوں میں کرفیو کے اوقات میں اضافہ کردیا ہے ۔سعودی خبررساں ادارے کے مطابق وزارت داخلہ کے معتبر ذرائع کا کہنا ہے کہ ’کورونا وائرس سے بچاوکیلیے حفاظتی تدابیر کے تحت متعدد فیصلے کیے گئے ہیں جن کا مقصد شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں کو انکی روز مرہ کی ضرورتوں کو پورا کرنے کے لیے سہولت فراہم کرنا ہے۔

وزارت داخلہ کی جانب سے کیے جانے والے فیصلوں میں کہا گیا ہے کہ ’ مملکت کے دیگر شہروں اور علاقوں میں بھی کرفیو کے اوقات میں اضافہ گذشتہ روز سے کیا جارہا ہے، جس کے مطابق ان تمام شہروں میں جہاں کرفیو کے اوقات کم تھے وہاں اب کرفیو سہ پہر 3 بجے سے شروع ہوگا جو صبح 6 بجے تک جاری رہے گا۔فیصلے میں مزید کہا گیا ہے کہ ’ریسٹوران میں صرف ’ ٹیک اوے‘ کی اجازت ہوگی۔

طبی اصولوں کو مدنظررکھتے ہوئے تمام حفاظتی اقدامات کے تحت ہوم ڈلیوری سروس رات دس بجے تک مہیا کرسکیں گے۔ سعودی عرب کے وزیر صحت توفیق الربیعہ نے کہا ہے کہ مملکت میں آیندہ چند ہفتوں کے دوران میں کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد بڑھ کر ایک لاکھ سے دو لاکھ تک ہوسکتی ہے۔ ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ ہدایات اور طریق کار کی پاسداری کی وجہ سے کرونا وائرس کے کیسوں کی تعداد کو کم سے کم رکھنے میں مدد ملی ہے جبکہ ان ہدایات پر عمل درآمد نہ کرنے کی صورت میں کیسوں کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوسکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *